اغراض و مقاصد

اغراض و مقاصد: انجمن کا خاص مقصد یہ ہے کہ تعلیم دین کے زیور سے مومن مرد اور عورتوں کو آراستہ کیا جائے تاکہ عام لوگ احکام شریعت سے باخبر ہوں۔دینی مکاتب قائم کئے جائیں۔ اس سلسلے میں اساتذہ کی تقرری ، طلباء کے امتحانات ، مدرسوں کا معائنہ ، تعلیمی اخراجات کیلئے مالی وسائل کی تلاش ، وقف جات کو توسیع دینا ، اوقاف کی دیکھ بال، قوم کے دینی اور دنیوی امورات کی اصلاح، لڑائی جھگڑوں، فتنی فساد اور جھوٹے دعوؤں سے لوگوں کو روکنا، امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کے تقاضوں کو پورا کرنا، اخوت اور بھائی چارہ قائم کرنا، اتحاد بین المسلمین کیلئے جدو جہد کرنا جیسا کہ خدا وند تعالیٰ فرماتا ہے کہ تمام مومن ایک دوسرے کے بھائی ہیں تم اپنے بھائیوں میں اصلاح کرو اور رسول خداؐ کا ارشاد گرامی ہے کہ ایسے لوگوں کے درمیان صلح کروانا جن میں جدائی ہوچکی ہو تمام صدقات سے بہتر ہے۔ بانی انجمن شرعی شیعیان حضرت حجتہ الاسلام والمسلمین الحاج آقای سید یوسف الموسوی الصفوی النجفی قدس سرہ‘ کے مرتب کردہ اساسی خطوط کی روشنی میں انجمن درج ذیل اہداف کو حاصل کرنے کی کوشش کرے گی۔ ۱۔ صلاح کو رائج کرنا اور فساد کو روکنا۔ ۲۔ اہل اسلام کے درمیان اتحاد اور بھائی چارہ قائم کرنا اور عصبیت کو مٹانا۔ ۳۔ شیعیان جموں و کشمیر کے دینی اور دنیاوی امورات کی اصلاح۔ ۴۔ مسئلہ جموں و کشمیر کو تاریخی پس منظر میں متنازعہ تسلی کرتے ہوئے اس قابل قبول حل کیلئے تحریک حریت کشمیر میں موثر کردار نبھانا۔ ۵۔ فقہای شریعت اسلامی کے مروجہ احکام سے قوم کو مطلع کرنا۔ ۶۔ دینی مدارس کا انتظام کرنا اور اعلیٰ دینی تعلیم کا ممکنہ اہتمام کرنا۔ ۷۔ انجمن کے دائرہ اختیار میں آنے والے اوقاف کو منظم کرنا اور دیگر اوقاف کے نظم و فلاح کیلئے تعاون دینا۔ ۸۔ فرقہ امامیہ کی تبلیغ و ترویج ۔ ۹۔ انفرادی و اجتماعی معاملات میں حسب ضرورت تحقیق و قضاوت اور اصلاح کرنا۔ ۱۰۔ عزاداری امام حسینؑ کا اہتمام کرنا اور مقصد شہادت کی ترجمانی اور اس سلسلے میں شرعی خطوط کی نشاندہی۔ ۱۱۔ زندگی کے ہر شعبہ میں شریعت اسلامی کو رائج کرنا اور دیگر رفاہی و اصلاحی امور میں مسلم اداروں سے تعاون۔